سردار الطاف خان تھوراڑ سابقہ وائس چیئرمین ضلع کونسل و سابقہ ڈسٹرکٹ کونسلر ضلع پونچھ

سردار الطاف خان کا تعلق تھوراڑ مرکزی مقام سے ہے آپ نے اپنی تعلیم مکمل کرنے کے بعد آپ نے تھوراڑ اور تھوراڑ کے گردونواح کے علاقوں کے لیے سیاسی و سماجی فلاح بہبود کے لئے اپنی خدمات پیش کر دی اور آج تک اپنے علاقے اور مرکز کی کسی نہ کسی حوالے سے خدمات جاری رکھی ہوئی ہیں آپ أس وقت کے واحد نوجوان تھے جس کو یہ شرف حاصل ہے مولانا عبدالعزیز تھوراڑ وی نمبردار اسلم خان . مرحوم سردار روشن خان ۔ مرحوم سردار حفیظ جاوید ایڈوکیٹ ان سب لوگوں کے ساتھ آپ کو کام کرنے کا موقع ملا اور تھوراڑکے دیگر بزرگوں کی آپ کو رہنمائی حاصل تھی آپ نے پہلی مرتبہ تھوراڑیونین کونسل کے بلدیاتی انتخابات میں حصہ لے کر کامیابی حاصل کی اور ممبر منتخب ہوئے باقی منتخب ہونے والے ممبروں نے آپ کو چیئرمین یونین کونسل تھوراڑ منتخب کیا اورمرحوم سردار حفیظ جاوید ایڈووکیٹ تھوراڑ یونین کونسل کے کونسلر منتخب ہوئے حفیظ جاوید صاحب کے لیے میں نے قسط نمبر 13 میں ان کی حالات زندگی پر ایک پرسنٹ روشنی ڈالی تھی جس میں کچھ باتیں مجھے یاد نہ رہی اور میں قسط نمبر 13 میں نہیں لکھ سکا یہاں میں ان کو لکھ رہا ہوں حفیظ جاوید صاحب تھوراڑ یونین کونسل کے کونسلر بھی رہے اور ڈسٹرکٹ کونسل پونچھ کے ممبر بھی رہے تھوراڑمیں سب سے پہلے انگلش میڈیم پرائیویٹ تعلیمی ادارہ اقراء پبلک سکول کے نام سےحفیظ جاوید صاحب نے قائم کیا تھا حفیظ جاوید صاحب کی ہی بدولت آج تھوراڑ میں کہیں قسم کے اعلی پرائیویٹ انگلش میڈیم سکول اور کالج قائم ہیں کیونکہ پرائیویٹ سکولوں کا راستہ دکھانے والے مرحوم سردار حفیظ جاوید ایڈوکیٹ ہی تھے سردار عطاء خان جو مولانا عبدالعزیز صاحب کے صاحبزادے ہیں قسط نمبر 13میں کمنٹس لکھتے ہیں حفیظ جاوید صاحب زمانہ طالب علمی کے دور سے ہی صحافت کرتے آئے ہیں کراچی یونیورسٹی کے کسی میگزین کے ایڈیٹر بھی رہے ایک دو اور رسالوں کا ذکر بھی کیا جن کے ایڈیٹر اور کو ایڈیٹر تھے حفیظ جاوید صاحب تھوراڑ میں اپنی پریس لگاکر اپنا اخبار علاقہ کانڈی سے نکالنا چاہتے تھے مگر حالات اور واقعات کی وجہ سے یہ خواب ان کا ادورہ ہی رہا کچھ باتیں حفیظ جاوید صاحب کے لئے رہ گئی تھی وہ میں نے لکھ دی ہیں سردار الطاف خان نے تھوراڑ مرکز میں جو ادارے اس وقت تک آئے ہیں ان کے لئے کلیدی کردار ادا کیا اور امید کرتے ہیں کہ آئندہ بھی تھوراڑ مرکز کے لیے اہم رول ادا کرتے رہیں گے تھوراڑ میں گراؤنڈ نہ ہونے کی وجہ سے سردار الطاف خان نے نوجوانوں کو کھیل جاری رکھنے کے لیے اپنی زمین ماہیا کی ہوئی ہے آزاد کشمیر میں نامی گرامی والی بال ٹورنامنٹوں کی فہرست میں تھوراڑ کا نام بھی ایک منفرد اور نمایاں مقام رکھتا ہے آپ کی دی ہوئی جگہ پر جب آل پاکستان والی بال ٹورنامنٹ تھوراڑ کے مقام پر ہوتا ہے تو اس ٹورنامنٹ کی دھوم پور ے آزاد کشمیر میں اور پاکستان صوبہ پنجاب کےمختلف اضلاع اور صوبہ خیبر پختون خواہ کےمختلف اضلاع میں بھی مچی ہوتی ہے میں ایک واقعہ آپ لوگوں کو سناتا ہوں ان دنوں میں چھٹی گیا ہوا تھا تھوراڑ والی بال ٹورنامنٹ انتظامیہ کے لوگ والی بال کا ٹورنامنٹ کرنے کا پروگرام کر رہے تھے میں بانو پیلس پر بیٹھا ہوا تھا اتنے میں سردار الطاف خان کے بھائی قاری ممتاز صاحب آئے اور بیٹھے کہنے لگے سنا ہے کوئی والی بال کا ٹورنامنٹ کرا رہے ہو میں نے کہا جی ہاں بات چیت چل رہی ہے ابھی حتمی فیصلہ نہیں ہوا اگر حتمی فیصلہ ہوگیا تو ضرور والی بال کا ٹورنامنٹ کروائیں گے آگے سے وہ کہتے ہیں کہاں اور کس جگہ پر کرواؤ گے میں نے کہا نیچے کھیت میں تو انہوں نے کہا کہ وہاں تو مکئ ہے میں نے کہا اگر ٹورنامنٹ کا حتمی پروگرام بن گیا تو مکئ کاٹیں گے آگے سے انہوں نے کوئی جواب نہیں دیا کیوں کاٹیں گے یا میں فصل ضائع نہیں ہونے دوں گا بلکہ کہنے لگے آپ کی اپنی جگہ ہے جس طرح سے مرضی ہے استعمال کریں ایسے اعلی ظرف لوگوں کی میں تو قدر کرتا ہوں تھوراڑ کے تمام نوجوانوں نے کئی مرتبہ دیکھا ہوگا جس کھیت میں والی بال کے ٹورنامنٹ ہوتے ہیں یہاں کئی مرتبہ ‏‏گساس درخت اور فصل کاٹ کر والی بال ٹورنامنٹ کے لیے گراؤنڈ بنایا گیا 2017 کے والی بال ٹورنامنٹ کے افتاح کے موقع پر نمبردار اسلم خان صاحب نے خطاب کرتے ہوئے سردار الطاف اور ان کے بھائیوں سے گزارش کی جب تک گراؤنڈ کا کوئی بندوبست نہیں ہوتا اس وقت تک اس جگہ کو کھیل کود کے لیے فری رکھا جائے تو فائنل میچ میں سردار الطاف خان نے یہ اعلان کیا جب تک تھوراڑ گراؤنڈ کا بندوبست نہیں ہوتا اس وقت تک یہاں کسی قسم کی بھی فصل نہیں أ گائ جائے گی آپ نوجوان کھیلیں پریکٹس کریں اور اپنے علاقے کا نام روشن کریں بلدیاتی الیکشن میں کامیاب ہوکر آپ چیئرمین رہے دوسرے بلدیاتی الیکشن میں آپ نے کونسلر کا انتخاب لڑا اور آپ کامیاب ہوئے چیئرمین مرحوم سردار حنیف خان بنے جو کہ اس پی کے نام سے بھی جانے جاتے تھے یوں آپ دونوں حضرات تھوراڑیونین کونسل کے آخری چئیرمین اور کونسلر ہیں اس کے بعد آزاد کشمیر میں بلدیاتی انتخابات نہیں ہوئے ۔ ۔ ۔
تحریر : سردار مصطفی خان تحصیل تھوراڑ خاص ۔ ۔ ۔ ۔ ۔
2021۔2۔8

اپنا تبصرہ بھیجیں